Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

فیصل مجیب اورمحبوب چشتی پر رینجرز کے تشددکے واقعہ پر صحافی انجمنوں کی لاتعلقی اور متعصبانہ رویہ مہاجروں سمیت تمام اہل سندھ کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔طارق جاوید


 فیصل مجیب اورمحبوب چشتی پر رینجرز کے تشددکے واقعہ پر صحافی انجمنوں کی لاتعلقی اور متعصبانہ رویہ مہاجروں سمیت تمام اہل سندھ کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔طارق جاوید
 Posted on: 12/21/2021

فیصل مجیب اورمحبوب چشتی پر رینجرز کے تشددکے واقعہ پر صحافی انجمنوں کی لاتعلقی اور متعصبانہ رویہ مہاجروں سمیت تمام اہل سندھ کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔طارق جاوید
 رینجرز کے تشدد کے واقعہ پر بین الاقوامی تنظیم Committee to Protect Journalistsنے تومذمتی بیان جاری کیالیکن ملک کی صحافتی انجمنوں نے اس پر کوئی احتجاج نہیں کیااورپاکستان کاپورامیڈیااس ظالمانہ واقعہ پر خاموش رہا  
پاکستان کے عوام خود فیصلہ کریں کہ تعصب کون پھیلارہاہے ؟ اسی متعصبانہ طرز عمل نے پہلے بھی ملک کو دولخت کیا تھا
اگر یہ متعصبانہ طرز عمل جاری رہاتو مظلوم عوام بھی اپنی آزادی کے حصول کیلئے جوبھی اقدام اٹھائیں گے اس میں وہ یقینا حق بجانب ہونگے۔طارق جاوید

لندن ۔۔21دسمبر 2021ئ
متحدہ قومی موونٹ کی رابطہ کے کنوینر طارق جاوید نے مہاجرصحافیوں فیصل مجیب اورمحبوب چشتی پر رینجرز کے تشددپرپاکستان کی صحافتی تنظیموںکی خاموشی اور متعصبانہ رویہ کی شدیدمذمت کی ہے۔ اپنے بیان میںطارق جاوید نے کہاکہ فیصل مجیب اورمحبوب چشتی  9دسمبر کو2021کوعزیزآباد میں یوم شہداء کے موقع پر یادگار شہداآنے والے ایم کیوایم کے کارکنوں،خواتین اوربزرگوںپر رینجرز کے تشدد کی کوریج کر رہے تھے جو ان کی پیشہ وارانہ ذمہ داری تھی لیکن رینجرز اہلکاروں نے انہیں بہیمانہ تشد د کانشانہ بنایا جو انتہائی قابل مذمت ہے ۔طارق جاوید نے کہا کہ صحافیوںپر ہونے والے تشدد کے اس سنگین واقعہ کے بار ے میں صحافیوںکی بین الاقوامی تنظیم   (Committee to Protect Journalists) نے اپنی رپورٹ بھی شائع کی اوراس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے اس کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کامطالبہ کیا۔طارق جاوید نے کہاکہ CPJنے اس واقعہ کے بارے میں رینجرز کوای میل بھی کیالیکن رینجرز کی جانب سے اس ای میل کابھی کوئی جواب نہیں دیاگیا، اس رویہ اورصحافیوںپر کئے جانے والے تشددکے واقعہ سے اندازہ لگایاجاسکتاہے کہ رینجرز کرا چی میں عام شہریوں پر کیاکیا مظالم ڈھارہی ہے ۔ طارق جاوید نے کہا کہ یہ امرانتہائی افسوسناک ہے کہ فیصل مجیب اورمحبوب چشتی پر رینجرز کے تشددکے واقعہ پر ایک بین الاقوامی تنظیم نے تومذمتی بیان جاری کیالیکن ملک کی صحافتی انجمنوں نے اس پر کوئی احتجاج نہیں کیااورپاکستان کاپورامیڈیااس ظالمانہ واقعہ پر خاموش رہا ۔ کراچی کے صحافیوں کے ساتھ ہونے والے اس واقعہ پر پورے ملک کی صحافی برادری اورانجمنوں نے جس بے حسی ،لاتعلقی اور متعصبانہ رویہ کامظاہرہ کیاوہ مہاجروںسمیت تمام اہل سندھ کے لئے لمحہ فکریہ ہے ۔پاکستان کے عوام خود فیصلہ کریںکہ تعصب کون پھیلا رہاہے ؟ اسی متعصبانہ طرز عمل نے پہلے بھی ملک کو دولخت کیا تھا اوراگر یہ متعصبانہ طرز عمل اورامتیازی سلوک جاری رہا اورفوج ، رینجرزاورریاستی اداروں کے مظالم کی مذمت کرنے کے بجائے ان کے ظلم کی حمایت کی جاتی رہی تو مظلوم عوام بھی اپنی آزادی اور اپنے آزادوطن کے حصول کیلئے جوبھی اقدام اٹھائیں گے اس میں وہ یقینا حق بجانب ہونگے۔

٭٭٭٭٭



1/17/2022 5:05:36 AM